55

قطب پور: محکمہ انہار کے عملہ کی ملی بھگت سے پانی چوری کا سلسلہ جاری، متاثر کاشتکاروں کا احتجاج

قطب پور(عقیل ہاشمی سے) محکمہ انہار اور پانی چوروں کا گٹھ جوڑ۔ پائپوں کے ذریعے نہری پانی چوری کا سلسلہ جاری۔لاکھوں روپے رشوت لینے کا انکشاف ۔ٹیل پر بیٹھے کاشتکار پانی کی بوند بوند کو ترس گئے۔سونا اگلنے والی زمین بنجرہونے لگی فصلیں متاثر۔ جانور بھی پیاسے مرنے لگے ۔کاشتکار سراپا احتجاج

تفصیلات کے مطابق راجباہ 12.ایل سے موگہ نمبری 25413۔آر پرسب انجینئر امین چودھری کو بھاری رشوت کے عوض ساجد نامی کاشتکار شام 8 بجے سے صبح 8 بجے تک جبکہ برجی نمبر 27 تا 30 چکنمبر285.87 ڈبلیو بی کے قریب  رفیق نامی شخص سمیت دیگر افراد  ربڑ پائپ لگا کر پانی چوری کرتے ہیں  ٹیل پر بیٹھے خاور ساہی، وقاص جٹ، محمد عاصم علی، مہر غلام مرتضی، یاور عباس، تنویر جٹ، چوہدری منشاء نےپرامن احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے بتایا کہ پانی چور مافیا محکمہ انہار سب ڈویژن قطب پور سے ملی بھگت کر کے نہری پانی فروخت کرتا ہے۔

زیرزمین پانی کڑوا ہونے کی وجہ سے ہماری فصلیں سوکھ چکی ہیں جانور اور ہم ہمارے بچے پیاسے مر رہے ہیں ایک طرف سیلاب کا رونا رویا جا رہا ہے تو دوسری طرف خشک سالی کے امکانات بڑھ رپے ہیں۔رات بھر پانی کی سطح نہ ہونے کے برابر ہوتی ہے۔ایس ڈی او ندیم بھٹی ،اوورسیئر امین قطب پور علامتی استغاثہ کے ذریعے پانی چوروں سےمک مکا کے بعد معمولی جرمانے کرتا ہے جبکہ ان چوروں کے خلاف کوئی مقدمہ درج تک نہ ہوا ہے جو کرپشن کی واضح دلیل ہے۔

انہوں نے واضح کیا کہ ہم لودہراں ایکسپریس وے ملکی سالمیت بد امنی کی وجہ سے بلاک نہیں کر رہے تاہم ہمارہ مطالبہ پورا نہ ہوا تو ہم مذکورہ اقدام اٹھانے پر مجبور ہو جائیں گے۔انہوں چیف ایگزیکٹوانہار ملتان سے فوری سدباب کا مطالبہ کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں