34

تفتان جانے سے انکار کرنیوالے 44 ڈاکٹر معطل

چاغی (ویب ڈیسک) تفتان جانے سے انکار پر 44 ڈاکٹروں کو معطل کر دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق حکومت بلوچستان کے فوکل پرسن برائے انسداد کرونا نے آج میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ تفتان جانے سے انکار کرنیوالے ڈاکٹر معطل کر دئیے گئے ہیں۔

میر عمیر محمد حسنی کا کہنا تھا کہ حکومتی احکامات نہ ماننے پر 12 ڈاکٹر پہلے بھی معطل کیے گئے ہیں، اور اب تفتان جانے سے انکار کرنیوالے ڈاکٹروں کو معطل کر دیا گیا ہے. تفتان کو پاکستان کا ووہان قرار دیناغلط ہے، وفاقی حکومت نے کرونا وائرس کے تدارک پر کوئی مدد نہیں کی۔

یہ بھی پڑھیں: بلوچستان میں کورونا وائرس کے 19 مریض صحت یاب ہوچکے: جام کمال

فوکل پرسن برائے انسداد کرونا نے کہا کہ تفتان میں کنٹینر سٹی بنایا جا رہا ہے، جس میں 600 افراد کے قیام و طعام کی سہولتیں رکھی جائیں گی، ہم نے محدود وسائل کے باوجود ہزاروں لوگوں کو تفتان میں رکھا، پورے ملک کو حکومت بلوچستان کا شکر گزار ہونا چاہیے۔

انھوں نے کہا کہ تفتان میں کیے گئے اقدامات سراہنے کی بجائے ہم پر تنقید کی گئی، میں تفتان سرحد پر خدمات انجام دینے والوں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں، اس وقت ہر عوامی نمایندے کو اپنے حلقے میں ہونا چاہیے، لاک ڈاؤن ہم سب کے مفاد میں ہے۔

خیال رہے کہ سرکاری اعداد وشمار کے مطابق بلوچستان میں کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 185 ہو گئی ہے، جن میں سے اب تک 17 مریض صحت یاب ہو چکے ہیں جب کہ ایک مریض جاں بحق ہوا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں