28

عطائیت کے خاتمے اور سرکاری اسپتالوں کو بہتر بنانے کے لیے ہیلتھ کئیرکمیشن کا قیام عمل میں لا رہے ہیں: وزیراعلیٰ

گلگت (ویب ڈیسک) وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ حکومت صوبے میں پرائیویٹ صحت کے مراکز کے نظام کو بہتر بنانے ، عطائی ڈاکٹروں کے خاتمے اور سرکاری ہسپتالوں کو مزید بہتر بنانے پرخصوصی توجہ دے رہی ہے اس حوالے سے ہیلتھ کیئر کمیشن کا قیام عمل میں لایا جارہاہے۔

آئندہ کابینہ اجلاس اور اسمبلی میں ہیلتھ کیئر کمیشن کا مسودہ پیش کیا جائے۔ حکومت گلگت بلتستان نے جو اصلاحات کئے ہیں وفاقی حکومت اور دیگر صوبوں ان اصلاحات کی تقلید کررہے ہیں۔ وزیر اعلیٰ نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان کے تمام مسالک کے عبادت گاہوں کے امام اور موزنوں کو ہیلتھ انشورنس میں شامل کیا ہے تاکہ باعزت علاج و معالجے کی سہولت فراہم کی جاسکے۔ صوبے کے 62 ہزار سرکاری ملازمین کی بہتری اور بے ضابطگیوں کے خاتمے کےلئے ہیلتھ اور لائف انشورنس کی پالیسی متعارف کرائی جارہی ہے۔

ان خیالات کا اظہار وزیر اعلیٰ نے سرکاری ملازمین کے ہیلتھ اور لائف انشورنس کے حوالے سے اعلیٰ سطحی اجلاس میں گفتگوکرتے ہوئے کیا۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ سرکاری ملازمین کی ہیلتھ اور لائف انشورنس سے صوبے کے تمام سرکاری ملازمین کو بہتر طبی سہولیات جدید ہسپتالوں میں میسر آئیں گے۔ وزیر اعلیٰ نے سیکریٹری سروسز، سیکریٹری خزانہ، سیکریٹری صحت اور سیکریٹری قانون کو سرکاری ملازمین کی ہیلتھ اور لائف انشورنس کو جلد از جلد مکمل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ سرکاری ملازمین کے حقوق کے تحفظ کا خاص طور پر خیال رکھا جائے۔ وزیر اعلیٰ کو سرکاری ملازمین کی ہیلتھ اور لائف انشورنس کے حوالے سے بریفنگ دی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں