91

یکجہتی کشمیر ریلی دھنوٹ … شعورمیڈیا نیٹ ورک


ازقلم: اللہ ڈتہ انجم
دھنوٹ (لودھراں)

ملک بھر کی طرح دھنوٹ میں بھی وسیب اتحاد دھنوٹ اور دھنوٹ پریس کلب دھنوٹ کے زیرِ اہتمام یک جہتیئ کشمیر کے سلسلے میں ایک ریلی کا اہتمام کیا گیا۔جس کی قیادت میاں ولی محمد کاشف سابق چیئرمین یونین کونسل دھنوٹ و ممبر وسیب اتحاداور رانا یوسف علی خاں صدر دھنوٹ پریس کلب دھنوٹ نے کی۔ صبح 9بجے سے ہی شرکاء مقررہ جگہ احمد حسن شہید سب ڈویژن واپڈا آفس دھنوٹ کے سامنے آنا شروع ہو گئے۔10بجے تک وسیب اتحاد دھنوٹ کے عہدیداران وممبران،صحافی،سماجی تنظیمات الرّحیم ڈویلپمنٹ آرگنائزیشن کے صدر اے ڈی انجم،سوشل سروس کمیٹی دھنوٹ کے صدر ملک محمد صدیق نائچ بہمراہ ممبران،حاجی گلزار حسین مغل صدر مرکزی انجمن تاجران دھنوٹ،تاجران و شہریوں کی بہت بڑی تعداد پہنچ چکی تھی۔ صبح دس بجے احمد حسن شہید سب ڈویژن واپڈا آفس دھنوٹ سے ریلی شروع کی گئی۔

کشمیر کی آزادی کی دعا سے ریلی کا آغاز کیا گیا۔ریلی کے آغاز کے موقع پراے ڈی انجم اورملک محمد صدیق نائچ نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ کشمیری مسلمان اس وقت تاریخ ِ انسانی کے بد ترین ظلم اور بربریت کا سامنا کر رہے ہیں۔کشمیریوں سے پاکستانیوں کا روحانی رشتہ قائم ہے جسے دنیا کی کوئی طاقت توڑ نہیں سکتی۔ہمارے دل کشمیر یوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔ہم پا کستانی بے گناہ کشمیریوں کے ساتھ ہیں۔نہتے کشمیریوں پر انسانیت سوز مظالم کئے جا رہے ہیں۔ بھارت طاقت اور جبر کے زور پر کشمیریوں کو غلام نہیں بنا سکتا۔بھارتی دھمکیاں پاکستان کو کشمیریوں کی حمایت سے نہیں روک سکتیں۔مقبوضہ کشمیر میں بھارتی درندگی عروج پر ہے۔

جب ریلی کشمیر چوک دھنوٹ پہنچی تو میاں ولی محمد کاشف نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی جارحانہ اقدامات نے ایٹمی ہتھیاروں سے لیس دوقوتوں کو آمنے سامنے لا کھڑا کیا ہے۔مقبوضہ کشمیر میں آگ لگی تو پورے خطے میں پھیل سکتی ہے۔ جنگ مسلط کی گئی تو پاکستانی افواج بھر پور جواب دیں گی۔پاکستان مسلئہ کشمیر کے پُر امن حل کیلئے کوشاں ہے۔ پاکستان سول و ملٹری لیڈر شپ خطے میں امن کی خواہاں ہے۔عالمی طاقتیں، اقوامِ متحدہ اور انسانی بنیادی حقوق کی عالمی تنظیمیں بے گناہ کشمیریوں پر ہونے والے مظالم بند کرانے میں اپنا کلیدی کردار ادا کریں۔

ملتان ریواڑی پہنچ کر رانا یوسف علی خاں نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی ریاستی دہشتگردی اور ظلم و بربریت کا سلسلہ تھم نہیں سکا۔جنت نظیر وادی میں کرفیو اور لاک ڈاؤن سے وادی میں دکانیں، کاروبار، تعلیمی مراکز بند ہیں اور لوگ گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے ہیں۔ مقبوضہ وادی میں نام نہاد سرچ آپریشن اور پکڑ دھکڑ کی آڑ میں مظلوم اور نہتے کشمیریوں کے قتل کا سلسلہ بھی جاری ہے۔کشمیریوں پر ظلم کی انتہا ہوچکی ہے اور اقوام متحدہ اور عالمی طاقتیں بالکل خاموش ہیں جوبہت بڑا المیہ اور لمحہ فکریہ ہے۔

سعید چوک دھنوٹ میں حاجی گلزارحسین مغل نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ پاک افواج کسی بھی بھارتی جارحیت سے نمٹنے کی مکمل صلاحیت رکھتی ہیں۔اقوامِ عالم کو مودی کی دھمکیوں کا سختی سے نوٹس لینا ہو گا۔اگر عالمی قوتوں نے بھارتی اقدامات کو فوری نوٹس نہ لیا تو خطے میں لگائی جانے والی جنگ کی آگ کے شعلوں سے پوری دنیا متاثر ہو گی۔کشمیر کشمیریوں کا ہے اور کشمیر کا حل کشمیریوں کی مرضی سے ہونا چاہیئے۔ مسئلہ کشمیرکاواحدحل اقوام متحدہ کی قراردادوں اورکشمیریوں کی امنگوں کے مطابق استصواب رائے اورحق خودارادیت کی ادائیگی ہے۔ مودی سرکار کشمیریوں کی تحریک آزادی کو دبانے میں بری طرح ناکام ہے۔ پون صدی سے کشمیریوں کی نسل کشی کی جارہی ہے اور لاکھوں کشمیری آزادی کی جدوجہدمیں شہیدہوچکے ہیں۔

مقبوضہ کشمیر کا دنیا سے تعلق تاحال منقطع ہے۔جبکہ وادی میں خوراک اور ادویات کی قلت بھی برقرار ہے۔وادی میں موبائل فون، انٹرنیٹ سروس بند اور ٹی وی نشریات تاحال معطل ہیں۔بھارت اوراسکے سرپرست ذہن نشین رکھیں کہ وہ جتنے چاہے حربے اورہتھکنڈے استعمال کریں کشمیریوں کی آوازکوہرگزنہیں دبا سکتے۔تمام راستے شرکاء نے کشمیریوں کے ساتھ یک جہتی،ان کی آزادی اور بھارتی جارحیت کے خلاف نعرے لگائے۔سعید احمد بھٹہ،طارق بھائی و دیگرنے تمام راستے نعرے لگا کر ریلی کو گرمائے رکھا۔

ریلی کے اختتام پر کشمیر ی مسلمانوں کی آزادی کیلئے خصوصی دعا کی گئی۔ریلی میں ننھے منے بچوں نے بھی کشمیری بھائیوں کے ساتھ یک جہتی پر مبنی لکھے ہوئے پوسٹر اٹھا کرشرکت کی۔ محمد شاہد بھٹی،غلام مرتضیٰ دلکش، یاسر عزیز،بشیر احمدوائنس،حاجی اعجاز احمد وسیم،شوکت عباس شاہ،محمد ایوب شاہ،چیئرمین دھنوٹ پریس کلب دھنو ٹ ملک وقار احمد ڈاہا،محمد بلال،میاں بشیر احمد جبلہ قریشی سمیت لوگوں کی کثیر تعداد شامل تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں