34

حقیقت کے قریب ترین پتھر کے تکیے

میلان (ویب ڈیسک) اگر آپ تھکے ہارے کہیں سے آئے ہیں تو آرام کی غرض سے اس تکیے پر اپنا سر نہ دے ماریئے گا ورنہ آپ کا سر پھٹ بھی سکتا ہے؛ کیونکہ یہ تکیہ نہیں بلکہ سنگِ مرمر سے تراشا ہوا، تکیے کا مجسمہ ہے جو دیکھنے میں بالکل اصلی تکیے جیسا نظر آتا ہے۔

ناروے کے ماہر مجسمہ ساز ہاکون اینتون فیگراس کو مختلف انسانوں اور چیزوں کے مجسمے بناتے بناتے خیال آیا کہ کیوں نہ کچھ الگ کرکے دیکھا جائے، چنانچہ انہوں نے سنگِ مرمر (سفید پتھر) کو اس انداز سے تراشنا شروع کر دیا کہ وہ دور سے دیکھنے پر سفید اور نرم و ملائم تکیے کی طرح دکھائی دینے لگے۔

ہاکون اپنے کام میں اس قدر ماہر ہیں کہ بعض لوگ ان کے بنائے ہوئے ’’پتھریلے تکیوں‘‘ کو چھو کر دیکھتے ہیں اور تب کہیں جاکر انہیں یقین آتا ہے کہ یہ اصلی تکیے نہیں بلکہ سنگِ مرمر سے تراشے ہوئے، تکیوں کے بُت ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں