29

اسلامیہ یونیورسٹی میں میرٹ کیخلاف بھرتیاں، ہائی کورٹ کا دوماہ کے اندر انصاف کے تقاضوں کو پوراکرنیکا حکم

بہاولپور (محمد اکرام سے) اسلامیہ یونیورسٹی آف بہاولپور نے پاکستان تحریکِ انصاف کی حکومت کے منشور پھر برعکس میرٹ اور انصاف کی دھجیاں اڑاتے ہوئے سات پی ایچ ڈیز کو یکسر نظر انداز کرتے ہوئے دو ایم فل امیدواروں کو بھرتی کرلیا۔ نظراندازکئے جانے والے پی ایچ ڈی امیدواروں نے وائس چانسلرکے خلاف لاہورہائیکورٹ میں رٹ دائرکردی۔ہائیکورٹ نے وائس چانسلرکودو ماہ کے اندرقانون کے مطابق فیصلہ کرنے کے احکامات صادرکردئیے۔

تفصیلات کے مطابق اسسٹنٹ پروفیسرکی دواسامیوں کے لئے ہونے والے سلیکشن بورڈ کے لئے کل 9 پی ایچ ڈیز اور 8 ایم فل امیدوار شارٹ لسٹ کئے گئے جن میں سے 8 پی ایچ ڈیز اور 8 ایم فل امیدواروں نے انٹرویو دیے۔ حیران کن طور پر سلیکشن بورڈ نے سات پی ڈیز امیدواروں کو نظر انداز کرتے ہوئے دو ایم فل امیدواروں کو گریڈ 19 میں ریگولر اسسٹنٹ پروفیسر تعینات کردیا ۔نہ صرف یہ بلکہ ایک امیدوار کوتین ایڈوانس انکریمنٹس بھی دے دی گئی جوغالباًاپنی نوعیت کی پہلی مثال ہے۔واضح رہے ایچ ای سی کے 26 جنوری 2017 کو جاری ہونے والے نوٹیفیکیشن نمبر 1-4(FAC)/QA/2017(HEC) 22_84 کے مطابق اسسٹنٹ پروفیسر کی تعیناتی کے لئے کم از کم تعلیمی قابلیت پی ایچ ڈی ہونا ضروری ہے۔ لیکن یونیورسٹی کے سلیکشن بورڈ نے ایچ ای سی کے رولز کی دھجیاں بکھیر کر ایم فل امیدواروں کو نہ صرف انٹرویو کے لئے بلایا بلکہ دو امیدواروں کو سات پی ایچ ڈیز پر ترجیح دے کر ان کی تعیناتی بھی کردی۔

جن پی ایچ ڈی امیدواروں کونظراندازکیاگیا ہے ان میں سے بعض امیدواروں کا پیشہ ورانہ تجربہ منتخب کئے گئے ایم فل امیدواروں سے بھی کہیں زیادہ تھا۔ لیکن ان تمام چیزوں کو نظر انداز کرکے ان ایم فل امیدواروں کو ترجیح دی گئی جو اس پوسٹ کے لیے انٹرویو دینے کے بھی اہل نہ تھے۔میرٹ کی پامالی پر پی ایچ ڈی امیدواروں نےوزیراعلیٰ شکایت سیل،سٹیزن پورٹل، سیکرٹری ہائر ایجوکیشن کمیشن کو درخواستیں بھی دیں لیکن کسی نے بھی کوئی کاروائی نہیں کی جس پرانہوں نے لاہورہائیکورٹ سے رجوع کیا۔ ہائی کورٹ نے وائس چانسلرکوامیدواروں کی درخواست پرقانون کے مطابق کاروائی کے لئے دوماہ کاوقت دیاہے۔

متاثرہ امیدواران کاموقف تھاکہ وہ اپناحق لینے کے لئے ہرحدتک جائیں گے تاکہ تعلیمی اداروں میں میرٹ کابول بالاہوسکے اورآئندہ کسی ادارے کواپنی من مرضی کی تعیناتیاں کرنے کاموقع نہ مل سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں