45

گلگت بارکونسل کا وزیراعلیٰ اور گورنر کیخلاف سپریم کورٹ میں جانے کا اعلان

گلگت (ویب ڈیسک) گلگت بلتستان بار کونسل نے گورنر اور وزیر اعلیٰ کیخلاف سپریم کورٹ میں توہین عدالت اور نااہلی کی درخواستیں فوری طور پر دائر کرنے کا اعلان کر دیا۔

گلگت بلتستان بار کونسل کے وائس چیئرمین نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ بار کونسل کو جی بی کے آئینی حقوق کے حوالے سے سپریم کورٹ کے فیصلے پر عملدرآمد میں وزیر اعلیٰ حفیظ الرحمن اور گورنر راجہ جلال کے رکاوٹ بننے اور ذاتی مفادات کیلئے وزیروں کی ملی بھگت کے ناقابل تردید ثبوت حاصل ہو چکے ہیں یہ دونوں گلگت بلتستان کے عوام اور وکلاء کو گمراہ کررہے ہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ظاہری طور پر دونوں سپریم کورٹ آف پاکستان کے گلگت بلتستان کو پاکستان کے شہریوں کے برابر حقوق دینے کے فیصلے کی حمایت کرتے ہیں

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ اب گلگت بلتستان بار کونسل نے وفاقی وزیر قانون و دیگر اداروں سے سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلے سے متعلق میٹنگ و رابطے کیے تو واضح شواہد سامنے آئے کہ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان اور گورنر سپریم اپیلیٹ کورٹ اور چیف کورٹ میں ججز کے اعلیٰ عہدوں کو بندربانٹ کے ذریعے میرٹ کی دھجیاں اڑاتے ہوئے اپنے منظور نظر افراد میں تقسیم کرنے کی خاطر وفاق میں آکر سپریم کورٹ کے فیصلے پر عملدرآمد میں درپردہ خود ہی روڑے اٹکارہے ہیں ۔

بیان میں کہا گیا کہ حاصل شدہ شواہد کی بنیاد پر گلگت بلتستان بار کونسل کی طرف سے سپریم کورٹ آف پاکستان میں وزیر اعلیٰ اور گورنر کیخلاف توہین عدالت اور نااہلی کی درخواستیں فوری طور پر دائر کرکے ان کیخلاف تادیبی کارروائی یقینی بنائی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں