40

گرم مشروبات کو فوری یخ بستہ کرنیوالی بوتل متعارف

لاس ویگاس (ویب ڈیسک) جدید ترین مصنوعات کی سالانہ عالمی نمائش ’’کنزیومر الیکٹرونکس شو‘‘ پوری آب و تاب کے ساتھ جاری ہے اور اس موقع پر ’’میٹرکس‘‘ نامی ایک کمپنی نے ایسی بوتل پیش کی ہے جو اپنے اندر رکھے گئے مشروب (سافٹ ڈرنک وغیرہ) کو صرف چند منٹوں میں اتنا ٹھنڈا کرسکتی ہے کہ اسے پیتے ہی دانت بجنے لگیں۔

دراصل یہ بوتل نہیں بلکہ مشروبات ٹھنڈا کرنے والا ایک آلہ ہے جسے ’’جونو‘‘ کا نام دیا گیا ہے۔ یہ اتنا مختصر ہے کہ درمیانی جسامت والی میز کے ایک کونے میں بہ آسانی سما سکتا ہے۔ یہ اپنے ڈیزائن میں بھی بہت سادہ ہے اور اس میں صرف دو بٹن ہیں: ایک مناسب ٹھنڈا کرنے کےلیے اور دوسرا تیز ٹھنڈا کرنے کےلیے۔ ایک طرف پتلی اور لمبی ایل ای ڈی پٹی نصب ہے جو اندر رکھے مشروب کے گرم ہونے پر سرخ ہوتی ہے اور جب وہ مشروب مطلوبہ حد تک ٹھنڈا ہوجاتا ہے تو ایل ای ڈیز کی روشنی نیلی ہو جاتی ہے۔

لبتہ ’’جونو‘‘ میں کسی بھی شربت یا سافٹ ڈرنک وغیرہ کو براہِ راست انڈیلا نہیں جاسکتا بلکہ بوتل یا کین میں بند مشروب ہی اس میں رکھا جاسکتا ہے۔ کھلا شربت اس بوتل میں رکھ کر ٹھنڈا کرنے کےلیے ’’جونو‘‘ کے ساتھ علیحدہ سے ایک بوتل دستیاب ہے جو اس آلے میں بالکل فٹ آجاتی ہے۔

اس آلے کا طریقہ کار بہت سادہ ہے اس کی اندرونی نالیوں میں انتہائی سرد پانی ہر وقت گردش کرتا رہتا ہے۔ اندر رکھی مشروب کی بوتل کو جلد ٹھنڈا کرنے کےلیے اسے تیزی سے گھمایا جاتا ہے جس کی وجہ سے مشروب کا مائع، بوتل کی بیرونی دیواروں کے ساتھ لگ جاتا ہے۔ سیکنڈ بھر میں وہ بوتل کی سرد دیوار میں اپنی گرمی منتقل کرکے ٹھنڈا اور کثیف ہوکر قدرے اندر کی طرف چلا جاتا ہے اور اس کی جگہ دوسرا، نسبتاً گرم مائع لے لیتا ہے۔ اسی دوران ’’جونو‘‘ کی اندرونی نالیوں میں گھومتا ہوا انتہائی سرد پانی بھی حرکت کرچکا ہوتا ہے اور اس قدرے کم ٹھنڈے پانی کی جگہ نیا سرد پانی لے لیتا ہے۔ اس طرح مشروب کو ٹھنڈا کرنے کا سلسلہ تیزی سے آگے بڑھتا ہے اور شربت کی ایک لیٹر والی بوتل بھی صرف دو سے تین منٹ میں انتہائی یخ بستہ (شدید سرد) ہوجاتی ہے جیسے اس میں برف کی درجنوں ڈلیاں انڈیل دی گئی ہوں۔

فلحال یہ بوتل ’’پری آرڈر‘‘ کی بنیاد پر متعارف کروائی گئی ہے جس کی سپلائی ’’کنزیومر الیکٹرونکس شو‘‘ کے چند دن بعد شروع کی جائے گی۔ ویسے تو پری آرڈر کے مرحلے پر ’’جونو‘‘ کی 199 امریکی ڈالر (تقریباً 31,000 پاکستانی روپے) جتنی رکھی گئی ہے جو اگلے چند دنوں میں (پری آرڈر مرحلہ ختم ہوجانے کے بعد) 299 ڈالر (تقریباً 46,000 پاکستانی روپے) کردی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں