89

اب چہرے کے بالوں سے گبھرانا چھوڑیں

تحریروتحقیق: تحریم صغیر
(فری لانس جرنلسٹ، فیشن ڈیزائنر)

نوجوان بچیوں کے چہرے پر بال عموماً اگے نظر آتے ہیں۔یہ مسئلہ بہت عام ہو گیا ہے۔بعض چہروں پر یہ بال نہایت باریک ہوتے ہیں جنہیں ’رواں ‘کہا جاتاہے۔لیکن کچھ خواتین کے چہروں پر کافی نمایاں ہوتے ہیں۔عموماً پندرہ سے سولہ سالی کی عمر میں یہ بال نکلنے لگتے ہیں۔ان کے نمودار ہونے کی چند وجوہات درج ذیل ہیں:
1۔وراثت
2۔لڑکیوں کا لڑکوں والے طور طریقے اپنانا۔

3۔ماہانہ نظام کی خرابی۔

چہرے کے بالوں سے چھٹکارا حاصل کرنیکے طریقے:-
یہ بال رواں کی طرح ہیں‘تو ان سے نجات پانے کے لیے آدھی چمچی دہی چہرے پر ملئے‘اتنی شدت سے کہ رواں خود اترنے لگے۔اس کے بعد بیسن سے منہ دھولیجئے۔
اگر بال کالے اور سخت ہیں‘تو زیادہ تر خواتین‘تھریڈنگ‘کے ذریعے ان سے چھٹکارا پاتی ہیں لیکن اس طریقہ کارکی خامی یہ ہے کہ بال جلد دوبارہ نکل آتے ہیں اور عموماً ان کی تعداد بھی زیادہ ہو جاتی ہے۔

مزید برآں ویکسنگ بھی ایسے بالوں کا ایک علاج ہے جو کچھ بہترہے کیونکہ ویکس کرنے کے بعد بال دوبارہ دیر سے نکلتے ہیں اور آہستہ آہستہ بالکل ختم ہو جاتے ہیں۔

گھرمیں ویکس بنانےکا طریقہ:-
آپ چاہیں‘تو ویکس گھرمیں بھی بنا سکتی ہیں۔اس کی سادہ سی ترکیب یہ ہے کہ گڑ کو آٹے میں ملا کر پگھلالیں۔جب آمیزہ ٹھنڈا ہو جائے ‘تو بالوں پر لگائیں۔جب بال آمیزہ سے اچھی طرح ڈھک جائیں‘تو اس پر سوتی کپڑا چپکالیں۔
تھوڑی دیر بعد کپڑا کھینچ لیں۔لیکن خیال رہے کہ کپڑا بالوں کی مخالف سمت کھینچنا ہے۔بال ساتھ ہی اتر آئیں گے۔

پہلے خواتین توری یا کدو کی سی سے جسم دھوتی تھیں‘تو ان کے جسم پر بال نہیں تھے کیونکہ سبی رگڑنے سے بال آہستہ آہستہ ختم ہو جاتے ہیں ۔آج کل بال ختم کرنے کے لیے کئی سہولیات دستیاب ہیں مگر مسائل بھی اتنے ہی زیادہ ہیں۔ اس لیے جسم سے رواں ختم کرنے کے لیے سبی کا استعمال ہی بہترین ہے۔

چہرے کو بیسن سے دھویا جائے تب بھی بال آہستہ آہستہ ختم ہو جاتے ہیں ۔ایک ضروری بات ‘ویکس کے بعد جہاں بال اتارے گئے ہوں‘وہاں برف ملیے تاکہ بالوں کی نشوونماکم سے کم ہو۔

فیشل کرنے سے بھی بال کم ہوتے ہیں لیکن اس کا سامان انتہائی مہنگا ہے اور عموماً کئی خواتین نہیں خرید سکتیں۔ان کے لیے میں دیسی
فیشل کا طریقہ لکھ رہی ہوں۔

دیسی فشل:-
1۔سب سے پہلے چہرے اور ہاتھوں پر بیس منٹ تک لیموں کے عرق کا مساج کیجئے۔لیکن آنکھوں پر لیموں یا فیشل کی کوئی چیز نہیں لگانی۔
2 ۔اس کے بعد چہرے پر بیس منٹ تک بالائی کا مساج کریں۔
3۔پھر بیس منٹ تک بھاپ لیں۔
4۔بھاپ لینے کے بعد روئی سے آہستہ آہستہ ناک کی جلد صاف کریں۔
5۔بعد کو ترش مالٹے کے چھلکے کے اندر والے حصے سے اپنا چہرہ اچھی طرح رگڑیں اگر جلن ہورہی ہے‘ تو اس کامطلب ہے کہ مندرجہ بالا مراحل طے کرنے کے بعد صحیح نتائج برآمد ہورہے ہیں۔ ورنہ پھر آپ نے مساج کرنے میں کام چوری دکھائی ہے۔بہر حال بیس منٹ تک چھلکے سے اچھی طرح مساج کرنا ہے۔
6۔اس کے بعد ایک انڈے کی سفیدی ‘شہد ایک چمچ اور دودھ دو چمچ اچھی طرح ملا کر چہرے پر یہ آمیزہ لگائیں۔یہ ماسک آدھ گھنٹے تک لگا رہنا ضروری ہے۔
7۔جب آمیزہ خشک ہو جائے تو نیم گرم دودھ میں روئی ڈبو کر اس کی مدد سے اوپر سے نیچے کی جانب یہ ماسک اتارلیں۔

8۔اس کے بعدنیم گرم پانی سے منہ دھولیں ۔

یہ یاد رہے کہ بال ایک دم کبھی ختم نہیں ہوتے۔اگر آپ مہینے میں چار دفعہ فیشل کرتے ہوئے روزانہ دہی لگائیں اورمسلسل بیسن سے منہ دھوئیں‘تو تین ماہ تک آپ کے پچھتر فیصد بال ختم ہو سکتے ہیں ۔اگر آپ بال ختم کرنا چاہ رہی ہیں‘تو آج ہی سے عمل شروع کریں تاکہ اپنے احساس کمتری سے چھٹکارا پا سکیں۔

مصنفہ کے بارے میں:-

تحریم صغیر میڈیا کی طالبہ ہیں اور درس وتدریس کے شعبہ کے ساتھ منسلک ہیں، ملک کے نامور میڈیا گروپس میں کام کا تجربہ رکھنےکیساتھ ساتھ بیرون ملک بھی پاکستان کی نمائندگی کر چکی ہیں۔ آج کل تحریم صغیر بطور فری لانس جرنلسٹ اپنی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کا لوہا منوا رہی ہیں۔ اس کے علاوہ مصنفہ ویب ڈیزائننگ، فیشن ڈیزائننگ ، ککنگ اور دیگر فنون کی باقاعدہ ٹریننگ بھی حاصل کر چکی ہیں اور اب ملک کے طول و عرض میں بالخصوص خواتین کو بااختیار بنانے کے لیے اپنی خدمات سرانجام دے رہی ہیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں