65

اپنے ڈرائنگ روم کو دلکش بنائیں

تحریروتحقیق: تحریم صغیر
(فری لانس جرنلسٹ، فیشن ڈیزائنر)

سب گھروں میں ایک کمرہ ڈرائنگ روم کے نام سے مخصوص ہوتا ہے ۔اس کمرے میں صوفہ اور میز موجود ہوتی ہے قیمتی شو پیس،دلکش پردے ،بہترین فانوس اور پھول کے گلدان یہاں بڑی مہارت سے سجائے جاتے ہیں ۔گھر کا یہ حصہ خاص طور پر مہمانوں کو خوش آمدید کہنے کیلئے استعمال ہوتا ہے اس لئے کوشش کی جاتی ہے کہ اس کی سجاوٹ میں کوئی کمی نہ رہے۔گھر کو سجانا اور صاف کرنا تو عام معمول کی بات ہے لیکن اس حصے کی صفائی اور سجاوٹ پر خصوصی توجہ دی جاتی ہے۔

گھر میں کوئی مہمان آئے تو اسے یہاں بٹھایا جاتا ہے ،یہاں پر ہی ان کی خاطر مدارت کا انتظام کیا جاتا ہے اور یہی وہ کمرہ ہوتا ہے جو خاتون خانہ کے ذوق کی عکاسی کرتا ہے اس لئے ایک بار اپنے ڈرائنگ روم کا جائزہ لیں کہیں چند معمولی باتیں اس کا تاثر خراب کرنے کا سبب تو نہیں ؟پردے ،صوفہ اور دیوار کا رنگ آپس میں میل رکھتے ہیں ؟کیا کمرے میں سامان کی ترتیب درست ہے ؟ڈرائنگ روم کی ترتیب وتنظیم کے وقت اس امر پر بھر پور توجہ رکھی جائے کہ یہاں سامان کی بھر مارنہ ہو ۔

یاد رکھیں معیاری اور ضروری سامان سادگی اور ترتیب سے سجا کر دلکش تاثر حاصل کرنا ممکن ہے ویسے ڈرائنگ روم کو شاندار انداز میں سجانے ،سنوارنے کے لئے چند باتیں نہایت اہمیت کی حامل ہیں جیسا کہ کافی ٹیبل ڈرائنگ روم کی سب سے قابل توجہ چیز ہے اس کے علاوہ یہ بھی دیکھیں کہ کیا کمرے میں سامان رکھنے کے لئے درست جگہ کا انتخاب کیا گیا ہے اور یہ بھی دیکھیں کہیں آپ نے کمرے میں گنجائش سے زیادہ چیزیں تو نہیں رکھی ہوئیں ۔

ڈرائنگ روم میں پودے نہ ہوں یہ کیسے ممکن ہے ؟ہوم ڈیزائنگ کے جدید طریقے اسے گھر کا لازمی حصہ قرار دیتے ہیں ۔ڈرائنگ روم میں رکھے گئے صوفے اور پردوں کا امتزاج بھی اہمیت کے حامل ہیں ۔

مصنفہ کے بارے میں:-

تحریم صغیر میڈیا کی طالبہ ہیں اور درس وتدریس کے شعبہ کے ساتھ منسلک ہیں، ملک کے نامور میڈیا گروپس میں کام کا تجربہ رکھنےکیساتھ ساتھ بیرون ملک بھی پاکستان کی نمائندگی کر چکی ہیں۔ آج کل تحریم صغیر بطور فری لانس جرنلسٹ اپنی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کا لوہا منوا رہی ہیں۔ اس کے علاوہ مصنفہ ویب ڈیزائننگ، فیشن ڈیزائننگ ، ککنگ اور دیگرفنون کی باقاعدہ ٹریننگ بھی حاصل کر چکی ہیں اور اب ملک کے طول و عرض میں بالخصوص خواتین کو بااختیار بنانے کے لیے اپنی خدمات سرانجام دے رہی ہیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں