65

لودھراں کا اکلوتا چلڈرن پارک انتظامیہ کی غفلت کی وجہ سے تباہ

لودھراں (عبد الشکورحیدری سے) شہر میں واقع اکلوتا چلڈرن پارک میونسپل کمیٹی کے کئ مبینہ کرپٹ افسران کیلئے سونے کی چڑیا ثابت ہونے کے باوجود اب بھی صفائی کی ابترصورتحال۔جگہ جگہ گندگی کچراکے ڈھیر۔ نہ گھاس کی کٹائی،آوارہ کتوں کی بھرمار۔ نشیئوں کے ڈیرے۔ سیر وتفریح کیلئے آنیوالی فیملیز کی تعدادمیں کمی۔صبح سویرے سیر کیلئے آنیوالے شہریوں کی انتظامیہ پر شدیدتنقید۔

تفصیلات کے مطابق لودھراں شہر جوکہ تقریباََ دو لاکھ افراد پر مشتمل آبادی کا ضلعی ہیڈ کوارٹر ہے۔ مگربدقسمتی سے میونسپل کمیٹی لودھراں کے افسران اس اکلوتے چلڈرن پارک کی دیکھ بھال کرنے میں بھی بری طرح ناکام نظر آرھے ہیں۔ اوراگر چلڈرن پارک کے نام پر گزشتہ 10سالوں میں نکلوائے جانے والے بلوں کی رقوم کا ٹوٹل کیا جائے تو شاید یہ رقم کروڑوں روپے میں بنے گی۔ جسکی وجہ سے یہ چلڈرن پارک میؤنسپل کمیٹی میں تعینات رھنے والے کئی مبینہ کرپٹ افسران کیلئے سونے کی چڑیا سے کم نہیں رھا۔

چلڈرن پارک کی موجودہ صورتحال پر وہاں آئے شہریوں شمس خان،شوکت گھلو،عبدالغفارڈوگر،عبدالجبار سندھو،ملک نورمحمد،چوہدری ریاض،ملک ظفرآرائیں،چوہدری سعید،رزاق شاہ نے انتظامیہ اور میؤنسپل کمیٹی کے ذمہ دار افسران کو شدید تنقیدکانشانہ بناتے ہوئے کہا کہ لودھراں شہر جو کہ دو لاکھ شہریوں کی آبادی پرمشتمل ہے۔مگر شہرمیں صرف ایک پارک ہے اور اس کی صورتحال اس قدرخراب ہے کہ جگہ جگہ کوڑاکرکٹ اور گندگی پڑی ہوئے ہے۔

ایسا لگ رہا ہے کہ گزشتہ کئی ہفتوں سے جھاڑوتک نہیں لگایاگیا۔ جھولے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔والکنگ ٹریک پر اس قدر گند ہے کہ اس پر چلنا انتہائی مشکل ہے۔پلاٹوں میں گھاس کی کٹائی تک نہیں کی جاتی جس کی وجہ سے گھاس جھاڑویوں کی شکل اختیار کر چکا ہے۔پارک میں آوارہ کتوں کی بھرمار اوراس کے ارد گرد نشیوں کے ڈیرے ہیں اس تمام ترصورتحال کی وجہ سے بچوں کے ہمراہ آنے والی فیملیز کی تعداد میں مسلسل کمی واقع ہو رہی ہے۔

ذرائع کے مطابق چلڈرن پارک میں مبینہ غیر قانونی طور پر جھولے اور ایک گراؤنڈ میں ایک اضافی کینٹین بنائی گئی ہے جس کی وجہ سے ناصرف ان گراؤنڈ وں کی حالت خراب ہورہی ہے بلکہ میؤنسپل کمیٹی کے اہلکاران سے مبینہ بھتہ وصول کرتے ہیں۔ شہریوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب،کمشنرملتان اورڈپٹی کمشنر لودھراں سے مطالبہ کیا ہے کہ اس چلڈرن پارک کے نام پر نکلوائی جانے والی رقوم کا آڈٹ کروایا جائے اور فوری نوٹس لیکر اس کی حالت کو بہتر بنایا جائے تاکہ شہری سیروتفریح کیلئے بلا جھجھک آسکیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں