38

مشہور پاپ گلوکارہ میڈونا کا ہولی وڈ پروڈیوسر پر جنسی ہراسگی کا الزام

واشنگٹن (ویب ڈیسک) گذشتہ صدی میں دنیا کی 25 بااثر خواتین اور سب سے معروف پاپ گلوکارہ کا درجہ رکھنے والی امریکی گلوکارہ، لکھاری و ہدایت کار 60 سالہ میڈونا نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں بھی جنسی طور پر ہراساں کیا گیا۔

پاپ گلوکارہ میڈونا نے الزام عائد کیا ہے کہ ہولی وڈ پروڈیوسر 66 سالہ ہاروی وائنسٹن نے انہیں تین دہائیاں قبل اس وقت جنسی طور پر ہراساں کیا جب وہ ان کے ساتھ ایک دستاویزی فلم پر کام کر رہی تھیں۔

میڈونا نے ہاروی وائنسٹن پر ایک ایسے وقت میں جنسی طور پر ہراساں کرنے کا الزام عائد کیا ہے جب کہ وہ دوسری الزام لگانے والی خواتین کیساتھ معاہدہ کرنے کے قریب پہنچ چکے ہیں.

اروی وائنسٹن پر امریکا کی مقامی عدالت نے جنسی جرائم کے تحت فرد جرم عائد کر رکھی ہے اور وہ اس وقت ضمانت پر رہا ہیں۔

امریکی اخبار نیویارک ٹائمز کے میگزین کو دیے گئے خصوصی انٹرویو میں میڈونا نے انکشاف کیا کہ ہاروی وائنسٹن نے انہیں 1991 میں اس وقت جنسی طور پر ہراساں کیا جب وہ ان کے ساتھ ایک دستاویزی فلم پر کام کر رہی تھیں۔

میڈونا نے بتایا کہ ہاروی وائنسٹن نے اپنی حدود کو پار کیا اور ان کے ساتھ انتہائی قریب ہوکر شہوت پرست ہونے کی کوشش کی۔

گلوکارہ و لکھاری کا کہنا تھا کہ جس وقت ہاروی وائنسٹن ان کی جانب سے جنسی طور پر راغب ہوئے اس وقت وہ شادی شدہ تھے اور انہیں ان میں کوئی بھی دلچسپی نہیں تھی اور انہیں ان کا انداز بھی غلط لگا۔

میڈونا نے اعتراف کیا کہ وہ اس وقت بھی جانتی تھیں کہ ہاروی وائنسٹن نے ان کے علاوہ بھی دیگر کئی خواتین کے ساتھ ایسا ہی کیا ہے، لیکن چوں کہ وہ طاقتور تھے اور انڈسٹری میں ان کا بڑا نام تھا تو ہر کوئی مجبوری کے تحت ان کے ساتھ کام کرکے اپنا مقام بنانے کی کوشش کر رہا تھا۔

میڈونا نے خصوصی انٹرویو میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر بات کرنے سمیت اپنے کیریئر پر بھی بات کی۔

میڈونا نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو بھی خواتین کا احترام نہ کرنے والا شخص قرار دیا۔

ساتھ ہی میڈونا نے اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ کئی سال بعد ہاروی وائنسٹن کے خلاف خواتین سامنے آئیں اور اب ان کے خلاف مقدمات بھی زیر سماعت ہیں۔

دوسری جانب ہاروی وائنسٹن نے میڈونا کے الزامات کو جھوٹا اور حیران کن قرار دیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں